• Home
  • /
  • Blog
  • /
  • Zarb-e-Kaleem Jo Alam-e-Ejad Mein Hai Sahib-e-Ejad

Zarb-e-Kaleem Jo Alam-e-Ejad Mein Hai Sahib-e-Ejad

Posted in   Kulyat-e-Iqbal   on  June 10, 2021 by  admin

Kulyat-e-Iqbal (Zarb-e-Kaleem-191) Jo Alam-e-Ejad Mein Hai Sahib-e-Ejad

  

جو عالم ایجاد میں ہے صاحب ایجاد

ہر دور میں کرتا ہے طواف اس کا زمانہ

معانی
ایجاد کی دنیا عالم ایجاد
ایجاد کرنے والا ٗ موجد صاحب ایجاد
پھیرے لینا ٗ چکر کاٹنا۔ طواف

مطلب:  جو شخص ایجاد یعنی نئی نئی چیزیں دریافت کرنے اور بنانے والی دنیا سے تعلق رکھتا  ہے اور جسے لوگ ایجاد کا مالک یا نئی نئی چیزوں کو دریافت کرنے والا موجد کہتے ہیں۔ہر زمانہ میں اس کی قدر و منزلت رہی ہے اور زمانہ اس کے پھیرے لیتا رہا ہے یعنی  اہل زمانہ میں وہ بہت مشہور و مقبول رہا ہے۔

تقلید سے ناکارہ نہ کر اپنی خودی کو

کر اس کی حفاظت کہ یہ گوہر ہے یگانہ

معانی
پیروی تقلید
بے کار ناکارہ
خود آگاہی خودی
موتی موتی
بے مثل یگانہ

مطلب : اے شخص تو بھی نئی نئی چیزیں اور دنیا دریافت کرنے کی طرف دھیان دے۔محض اپنے زمانے کی پیروی نہ کر اور اندھا دھند اس کے پیچھے نہ چل ورنہ تیری خودی (خود آگاہی اور خود شناسی) کا وہ گوہر(جوہر /موتی) جو بے مثل ہے بے کار ہو جائے گا۔

اس قوم کو تجدید کا پیغام مبارک!

ہے جس کے تصور میں فقط بزم شبانہ

معانی
نیا پن تجدید
خیال تصور
رات کی مجالس بزم شبانہ

مطلب :جو قوم کبھی راتوں کی عیش و عشرت میں مشغول رہتی تھی یعنی لہو ولعب میں مشغول اور بے عمل تھی اب اس کے دل میں بھی نئی دنیا آباد کرنے اور قدیم غلط روایات کی پیروی سے باز آنے کا خیال پیدا ہو گیا  ہے۔یہ اس کے لئے نیک فال ہے۔خدا کرے وہ بھی اجتہاد(پرانی روایات کو جدید تقاضوں کے مطابق کرنے سے کام لے کر دوسری ترقی یافتہ قوموں کی صف میں شامل ہو جائے لیکن اس طرح کہ اپنا مرکز عقائد نہ چھوڑے۔

لیکن مجھے ڈر ہے کہ یہ آوازۂ تجدید

مشرق میں ہے تقلید فرنگی کا بہانہ

معانی
غلغلہ دھوم آوازہ
نئی دنیا آباد کرنا تجدید
اہل مغرب کی پیروی تقلید

مطلب :اس سے پہلے شعر میں علامہ نے مشرقی اقوام خصوصاً  مسلمانوں کو اس بات پر مبارک باد دی  ہے کہ ان کے دلوں میں بھی قدیم زمانے کی اندھا دھند تقلید (پیروی) کی بجائے نیا جہان آباد کرنے اور نئی  ترقیاں کرنے کا خیال پیدا ہو رہا ہے لیکن  اس مبارک باد کے ساتھ ساتھ یہ تنبیہہ بھی  کر رہے ہیں کہ یہ ترقی ایسی نہ ہو کہ ہم تہذیب ٗ تمدن ٗ ثقافت وغیرہ میں اہل مغرب کی پیروی کرنے لگیں اور ان کی طرح انسانی اقدار کو برباد کر بیٹھیں۔ یہ ترقی  اور تجدید اس طرز پر ہونی چاہیے کہ اپنی مذہبی اور انسانی اقدار بھی قائم رہیں اور ترقی بھی حاصل ہو جائے۔

I've been in the business of writing, marketing, and web development for a while now. I have experience in SEO and content generation. If you need someone who can bring life to your words and web pages, I'm your guy.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked

{"email":"Email address invalid","url":"Website address invalid","required":"Required field missing"}
Subscribe to get the latest updates